کب دستخط فرمائیےگا۔۔۔

پاکستان غلامی کے خاتمے کے بین الاقوامی کنونشن مجریہ انیس سو انچاس کو تو تسلیم کرتا ہے لیکن آج بھی ہمارے اردگرد بھٹہ مزدوروں، نسل در نسل قرض میں جکڑے ہوئے کھیت مزدوروں اور گھریلو ملازموں کی شکل میں لاکھوں غلام اور لونڈیاں موجود ہیں لیکن ہمیں نظر نہیں آتے۔ سرکاری و نیم سرکاری ملازمین اور صنعتی کارکنوں کے حقوق و مراعات کاغذی سطح پر ہی سہی لیکن قانونی دستاویز کی شکل میں کم ازکم موجود تو ہیں۔ مگر اس دائرے کے باہر جتنے غلام ہیں ان کا کوئی پرسانِ حال نہیں۔

Continue reading on: BBCUrdu

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s